Jan 23, 2021 | 2:45 AM

Trend TV

Better Informed Today

لاہور پولیس کے 16 ایس ایچ اوز کو ’لائن حاضر‘ کرنے کا حکم

لاہور پولیس کے 16 ایس ایچ اوز کو ’لائن حاضر‘ کرنے کےآڈرز

ڈی آئی جی آپریشنز اشفاق خان کی طرف سے لائن حاضر کیے گئے افسران میں انسپکٹر کے 8 اور سب انسپکٹر کے 8 ایڈیشنل ایس ایچ اوز شامل ہیں
لاہور (تازہ ترین۔ 26 نومبر2020ء) ناقص کارکردگی پر لاہور پولیس کے 16 ایس ایچ او کو ’لائن حاضر‘ کرنے کے احکامات جاری کردیے گئے۔ تفصیلات کے مطابق ڈی آئی جی آپریشنز اشفاق خان کی طرف سے 16 ایس ایچ اوز کو لائن حاضر کرنے کے احکامات جاری کیے گئے جن میں انسپکٹر کے 8 اور سب انسپکٹر کے 8 ایڈیشنل ایس ایچ اوز شامل ہیں۔ اس سلسلے میں بتایا گیا ہے کہ ڈی آئی جی آپریشنز نے ایس ایچ او تھانہ بھاٹی گیٹ انسپکٹر منور احمد کو لائن حاضر کر دیا اس کے علاوہ ناقص کارکردگی پر ایس ایچ او تھانہ سند ر انسپکٹر شرجیل ضیا کو بھی لائن حاضر کیا گیا۔
اس سے پہلے اختیارات کے ناجائز استعمال ، مقدمات کے اندراج میں تاخیر اور ناقص تفتیش کرنے پر لاہور پولیس کے 5 افسران کو گرفتار کرلیا گیا ، اختیارات کا ناجائز استعمال اور شواہد مسخ کرنے پر افسران کے خلاف مقدمات بھی درج کرلیے گئے ۔
تفصیلات کے مطابق سابق ایس ایچ او گجر پورہ انسپکٹر رضاجعفری کو اختیارات کے ناجائز استعمال پر گرفتار کیا گیا ، اے ایس آئی عمران احمد ، محمد عمران اور شہزاد بٹ کے خلاف شواہد مسخ کرنے پر مقدمہ درج کیا گیا جبکہ اے ایس آئی ارشاد کو غیر ملکی خاتون سے رشوت طلب کرنے پر حوالات میں بند کیا گیا ہے ، اے ایس آئی ارشاد کو تھانہ باٹا پور میں مقدمہ درج کرکے حوالات میں بند کیا گیا ، اس سلسلے میں سی سی پی او لاہور عمر شیخ کا کہنا ہے کہ اگر کسی بھی پولیس افسر یا اہلکار نے شہریوں کی داد ر سی میں تاخیر کی تو سخت کارروائی ہوگی ، افسران مقدمات کی تفتیش میں شواہد کو مد نظر رکھتے ہوئے میرٹ پرچالان لکھیں۔

دوسری طرف سی سی پی او لاہور پولیس عمر شیخ نے کہا ہے کہ یکم جنوری 2021 تک لاہور پولیس، نیویارک پولیس بن جائے گی، ریکارڈ یافتہ قبضہ گروپوں کیخلاف بڑے پیمانے پر آپریشن کی تیاری مکمل کرلی ہے، قبضہ گروپ کیخلاف کریک ڈاؤن کیلئے اصل ٹیم آپریشن ونگ ہے۔