Jan 17, 2021 | 8:24 AM

Trend TV

Better Informed Today

بھارت میں کوئی اقلیت محفوظ نہیں

بھارت میں کوئی اقلیت محفوظ نہیں: شاہ محمود قریشی

اسلام آباد: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی سکیورٹی فورسز کی جارحیت سے تین کشمیری نوجوانوں کی شہادت کی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے سخت الفاظ میں مذمت کی ہے اور عالمی برادری سے بھارتی اقدامات کا نوٹس لینے کا مطالبہ بھی کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ انتہا پسند بی جے پی نے ایک طرف مقبوضہ کشمیر میں ظلم و بربریت کی انتہا کر دی گئی ہے تو دوسری جانب بھارت میں مسلمانوں، سکھوں اور عیسائیوں سمیت کوئی اقلیت محفوظ نہیں، انہوں نے مزید کہا کہ مودی سرکار نے اقلیتوں کو کچلنے کیلئے ترمیمی ایکٹ اور این آر سی جیسے متنازعہ قانون بنا رکھے ہیں۔
شاہ محمود قریشی نے کہا کہ دنیا نے دیکھا کہ کیسے دہلی فسادات میں مسلمانوں کو بے رحمی سے مارا گیا اور بڑے پیمانے پر اُن کی املاک کو لوٹا گیا، کیسے بابری مسجد کی جگہ مندر کی تعمیر ہندوتوا ذہنیت کی عکاسی کرتا ہے۔

یاد رہے کہ مودی سرکار نے کشمیر میں بھارتی فورسز کے ظلم وستم اور بھارت میں کسانوں کے احتجاج سے توجہ ہٹانے کے لیے ایک بار پھر فالس فلیگ آپریشن کی خفیہ منصوبہ بندی کر لی ہے۔

مودی سرکار کا یہ پرانا وطیرہ ہے کہ جب بھی وہ سیاسی طور پر کسی مشکل میں ہوتا ہے تو پاکستان کے خلاف کارروائی کرتا ہے تاکہ انتہا پسند ہندوؤں کی حمایت حاصل کی جا سکے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ اس طرح کے کاموں میں بھارتی میڈیا بھی کھل کر مودی سرکار کی حمایت کرتا ہے۔ دراصل میڈیا کی مکمل حمایت حاصل ہونے کی وجہ سے مودی پاکستان کے خلاف سازشیں کرتا رہتا ہے۔